46

اثاثہ جات کیس، شہباز شریف کو ریلیف ملے گا یا نہیں؟

آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس، لاہور ہائی کورٹ شہباز شریف کی درخواست ضمانت پر آج سماعت کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس سردار محمد سرفراز ڈوگر اور جسٹس اسجد جاوید گھرال پر مشتمل دو رکنی بنچ شہباز شریف کی درخواست ضمانت پر سماعت کرے گا۔ شہباز شریف نے اپنے وکیل امجد پرویز کے ذریعے درخواست ضمانت میں چیئرمین نیب اور ڈی جی نیب کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ منی لانڈرنگ کا ریفرنس دائر ہو چکا ہے اور احتساب عدالت میں کیس کا ٹرائل جاری ہے۔مکمل لاک ڈاﺅن ہوگا یا نہیں، کابینہ کمیٹی کا اجلاس آج طلب

 کئی ماہ سے جیل میں قید ہوں اور ٹرائل مکمل ہونے میں ابھی طویل وقت لگے گا۔ کیس کا تمام تر ریکارڈ بھی نیب کے پاس ہے اور اس نے کسی قسم کی ریکوری نہیں کرنی۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ شہباز شریف اپوزیشن لیڈر ہیں، قید میں ہونے کی وجہ سے آئینی ذمہ داریاں پوری نہیں کر پا رہے۔

درخواست گزار کی عمر 70 سال اور وہ کینسر کے مریض ہیں۔ وہ ٹرائل کورٹ میں سماعت کے موقع پر باقاعدگی سے شامل رہیں گے۔ درخواست ضمانت میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت ضمانت بعد از گرفتاری منظور کرتے ہوئے رہائی کے احکامات جاری کرے۔ علی ظفر اور میشاشفیع کیس میں اہم پیشرفت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں