انسان خلا تسخیر کرنے کے ساتھ مریخ پر جانے کا بھی خواہشمند رہا ہے اور اب اس سیارے پر انسانوں کی دنیا بسانے کی تیاریاں کر لی گئی ہیں۔

ہمارے نظام شمسی میں مریخ سیارے کو زمین کے ماحول سے قریب تر گردانا جاتا ہے۔ کئی خلائی مشن بھی وہاں بھیجے گئے اور وہاں زندگی کے آثار اور پانی کی تلاش کی کوششیں بھی جاری ہیں اور اس حوالے سے کئی کامیاب پیش رفت بھی ہوئی ہے۔

تاہم اب مریخ پر انسانوں کی دنیا بسانے کی تیاریاں کر لی گئی ہیں۔ مریخ جیسے ماحول میں ایک سال سے زائد دن قیام کے بعد چار افراد کی حقیقی دنیا میں واپسی ہوگئی۔

اس تجربے کا مقصد یہ جاننا تھا کہ مریخ پر طویل دورانیے کے مشنز سے انسانی جسم اور ذہن پر کیا اثرات مرتب ہو سکتے ہیں؟

امریکا اور چین 2030 میں مریخ پر انسانوں کو بھیجنے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں اور اسی حوالے سے امریکی خلائی ادارے ناسا نے مریخ جیسے ماحول پر مبنی ایک تھری ڈی پرنٹڈ جگہ گزشتہ سال تیار کی تھی۔

مریخ کے ماحول سے مشابہہ اس جگہ پر گزشتہ سال جون 2023 سے چار افراد مقیم تھے جو ایک سال سے زائد عرصہ وہاں گزارنے کے بعد مریخ جیسے ماحول سے واپس اپنی اصل دنیا میں آگے ہیں۔

Card image cap
گوگل کا مصنوعی ٹیکنالوجی سے متعلق بڑا فیصلہ

کیلیفورنیا : گوگل کی جانب سے آرٹیفیشل انٹیلی جنس (اے آئی) ٹیکنالوجی پر مبنی جیمنائی سسٹم کو جی میل، گوگل ڈاکس، شیٹس اور سلائیڈز جیسی سروسز کا حصہ بنا دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گوگل نے جی میل اور دیگر سروسز کے لیے اے آئی ماڈل متعارف کروا دیا
جی میل کے لیے اے آئی اسسٹنٹ بھی متعارف کرایا گیا ہے گوگل سروسز کے لیے جیمنائی 1.5 پرو ماڈل استعمال کیا جائے گا جو سائیڈ پینل میں چھپا ہوگا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق گوگل انتظامیہ کی طرف سے ایک بلاگ پوسٹ میں اعلان کیا گیا کہ جیمنائی کو جی میل اور دیگر سروسز کے نئے سائیڈ
پینل کا حصہ بنایا جا رہا ہے۔

اے آئی ماڈل سے صارفین کو کافی مدد ملے گی، یہ نیا سائیڈ پینل بیشتر سروسز میں اوپر دائیں کونے میں موجود سپارک بٹن پر کلک کرنے پر اوپن ہوگا اور صارفین جیمنائی سے مختلف سوالات پوچھ سکیں گے۔

اینڈرائیڈ اور آئی او ایس ڈیوائسز کے صارفین جی میل میں اے آئی ٹول کو ای میل تھریڈز کے تجزیے کے لیے استعمال کیا جاسکے گا اور سمری میں مخصوص نکات ہائی لائٹ کیے جائیں گے۔ اس اپ ڈیٹ کا مقصد طویل ای میلز پڑھنے میں ضائع ہونے والے وقت کو بچانا ہے۔

گوگل کے مطابق جیمنائی کو متعارف کرانے کا سلسلہ 25 جون سے شروع ہوا ہے اور یہ بتدریج تمام صارفین کو دستیاب ہوگا۔

Card image cap
تمام اسمارٹ فونز کے لیے ایک ہی چارجر لازمی قرار

نئی دہلی : بھارت میں حکومت نے تمام اسمارٹ فونز کے لیے ایک ٹائپ سی چارجر کو آئندہ برس جون تک لازمی قرار دینے کے احکامات جاری کردیے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی حکومت نے پہلی بار دسمبر 2022 میں یہ عندیہ دیا تھا کہ تمام فونز کے لیے ایک ہی ٹائپ سی چارجر لازمی قرار دیا جائے گا۔

اس حوالے سے اور اس وقت کی حکومت نے تمام موبائل کمپنیوں کو اس ضمن میں ایک مراسلہ بھی جاری کر دیا تھا۔

حکومتی فیصلے کے مطابق تمام موبائل کمپنیاں جون 2025 تک بھارت میں فروخت کے لیے پیش کیے جانے والے اپنے تمام فونز کو ٹائپ سی چارجر کے ساتھ پیش کریں گی اسی طرح بھارتی حکومت نے تمام لیپ ٹاپس کے لیے بھی ٹائپ سی چارجر لازمی قرار دیا ہے تاہم اس ضمن میں حکومت نے کمپنیز کو جون 2026 تک کا وقت دیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق بھارتی حکومت تیسرے مرحلے میں دیگر الیکٹرانک آلات جن میں ہیڈ فونز اور دوسرے آلات بھی شامل ہیں، ان کے لیے ایک ہی ٹائپ سی چارجر لازمی قرار دے گی، تاہم تیسرے مرحلے کا آغاز 2026 کے بعد ہونے کا امکان ہے۔

واضح رہے کہ بھارت سے قبل پہلی بار یورپین یونین نے تمام فونز اور لیپ ٹاپس کے لیے ایک ہی ٹائپ سی چارجر لازمی قرار دیا تھا اور تمام کمپنیاں اب یورپین یونین کے 27 ہی ممالک میں ٹائپ سی چارجر کے ساتھ فونز اور لیپ ٹاپ دسمبر 2024 تک فروخت کے لیے پیش کریں گی۔

Card image cap
بل گیٹس کا اہم اعلان

بل گیٹس نے اپنی زندگی کے نجی اوراق کھولنے کا فیصلہ کر لیا ہے، اس سلسلے میں انھوں نے اعلان کیا ہے کہ وہ اپنی یادداشتیں تحریر کریں گے۔

مائیکرو سافٹ کے شریک بانی بل گیٹس نے منگل کو ایک بلاگ پوسٹ میں اپنی زندگی کے بارے میں کتاب لکھنے کا اعلان کیا ہے، انھوں نے کتاب کا عنوان بھی بتا دیا ہے، سورس کوڈ: مائی بگننگ (Source Code: My Beginnings) 4 فروری 2025 میں فروخت کے لیے پیش کی جائے گی۔

بل گیٹس کے لیے کتابیں لکھنا کوئی نئی بات نہیں ہے، وہ 4 کتابوں کے مصنف ہیں تاہم اپنی کہانی وہ پہلی بار سنانے جا رہے ہیں، اس کتاب میں ان کی ابتدائی زندگی پر روشنی ڈالی جائے گی۔ بل گیٹس کے ترجمان نے کہا یہ ’بل کی اصل کہانی‘ ہوگی، اور اس کتاب میں 1975 میں قائم کی گئی بلاک بسٹر ٹیکنالوجی کمپنی مائیکروسافٹ اور خیراتی ادارے گیٹس فاؤنڈیشن پر توجہ مرکوز نہیں کی جائے گی۔

دل چسپ بات یہ ہے کہ اس کتاب کے سرِ ورق پر ایک ایسے بل گیٹس کی تصویر ہوگی جو بچہ ہے اور ان کے دانتوں کے درمیان خلا ہے، اور جو آج کے بل گیٹس سے بالکل مختلف ہیں۔


بل گیٹس کے مطابق لڑکپن میں وہ اپنے والدین سے لڑتے تھے، کسی اپنے کو اچانک کھونے کا احساس اور کالج سے لگ بھگ نکالے جانے جیسے واقعات یادداشتوں پر مشتمل
اس کتاب میں موجود ہوں گے۔

بل گیٹس نے ٹھیلے پر چائے بیچنے والے کو ہیرو بنا دیا، ویڈیو وائرل

ان کا کہنا ہے کہ یہ یادداشتیں مائیکرو سافٹ یا گیٹس فانڈیشن یا ٹیکنالوجی کے مستقبل کے بارے میں نہیں، بلکہ یہ ایک انسان کی ذاتی کہانی ہے، اس میں بتایا جائے گا کہ بل گیٹس کیسے وہ انسان بنا جو آج نظر آتا ہے، اس کا بچپن کیسے تھا اور وہ جوانی میں کیا خواب دیکھتا تھا۔

Card image cap
لندن کے اسپتال سائبر حملوں کی زد میں، آپریشنز منسوخ

لندن کے متعدد اسپتال سائبر حملوں کی زد میں آگئے، جس کے باعث متعدد آپریشنز منسوخ کردیے گئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق سائبر حملوں کی زد میں آنے والے لندن کے اسپتالوں کی ایمرجنسی میں آنے والے مریضوں کو دوسرے اسپتالوں میں بھیجا جارہا ہے۔

رپورٹ کے مطابق سائبر حملے سے متاثرہ اسپتالوں میں مریضوں کو دی جانے والی سروسز متاثر ہوئی ہیں، متعلقہ اسپتالوں میں خصوصاً خون کی منتقلی اور ٹیسٹ کے نتائج کا نظام متاثر ہوا ہے۔

میڈیا رپورٹ میں ہیلتھ سروس جرنل کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ سائبر حملہ کرنے والوں کا مقصد رقم حاصل کرنا ہے۔

اس سے قبل بھارتی ہیکرز کی جانب سے قطر کے سرکاری پورٹل پر سائبر حملے کئے گئے تھے۔

بھارتی ہیکرز مختلف ملکوں پر جاسوسی اور دہشت گردی کی مد میں سائبر حملوں میں ملوث ہیں، جس پر عالمی سطح پر بھارتی ہیکرز اکاؤنٹس پر پابندی لگانے کا مطالبہ سامنے آ رہا ہے۔

بھارت سائبر حملوں سے دوسرے ملکوں کی حساس معلومات کو اپنے مذموم ارادوں کے لیے استعمال کرتا ہے، بھارتی ہیکرز نے کینیڈا اور فلسطین کے اکاؤنٹس پر بھی سائبر حملے کیے۔

سائبر کرائم کی روک تھام کیلیے نئی ایجنسی کا قیام

اکتوبر 2023 کو بھارت کے بحریہ کے سابق افسران کو قطر میں اسرائیل کے لیے جاسوسی کے الزام میں سزائے موت دی گئی تھی، جس کے بعد قطر پر سائبر حملے تیز کر دیے گئے۔


پاکستان کا دوسرا مواصلاتی سیٹلائٹ پاک سیٹ ایم ایم وین لانچ کیلئے تیار

پاکستان کا جدید مواصلاتی سیٹلائٹ پاک سیٹ ایم ایم ون 30 مئی کو خلا میں بھیجاجائے گا، سیٹلائٹ دور درازعلاقوں میں ہائی اسپیڈ کنیکٹوٹی اوربراڈبینڈ سروس میں معاونت کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کا دوسرا مواصلاتی سیٹلائٹ پاک سیٹ ایم ایم وین لانچ کیلئے تیار ہے ، سپارکو کی جانب سے بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کا جدید مواصلاتی سیٹلائٹ 30 مئی کو خلامیں بھیجا جائے گا۔

سپارکو کا کہنا ہے کہ پاک سیٹ چین کے شیچانگ سیٹلائٹ لانچ سینٹر سے خلاء میں بھیجا جائے گا، ہائی پاور ملٹی مشن سیٹلائٹ جدید کمیونیکیشن سروسز فراہم کرے گا اور دوردرازعلاقوں میں ہائی اسپیڈ کنیکٹوٹی اوربراڈبینڈ سروس میں معاونت کرے گا۔

سیٹلائٹ خراب ترین موسمی حالات میں بھی مستحکم کنیکٹوٹی فراہم کرے گا، اس سیٹلائٹ کی لائف 15 سال ہو گی۔

یاد رہے پاکستانی سیٹلائٹ آئی کیوب قمر چینی مشن چانگ ای 6 کیساتھ 3 مئی کو چاند پرروانہ ہواتھا، یہ تاریخی لمحہ پاکستان کے وقت کے مطابق 3 مئی کی دوپہر 2 بج کر 18 منٹ پر چین کے ہینان اسپیس لانچ سائٹ سے خلا میں بھیجا گیا تھا۔

اس موقع پر پاکستان کے ماہرین کی ٹیم اسپیس سینٹر میں موجود تھی۔ سیٹلائٹ مشن کی روانگی کے وقت لانچ سائیڈ پر پاکستان کا قومی ترانہ پڑھا گیا اور نعرہ تکبیر سے ہال گونج اٹھا۔

انسٹیٹیوٹ آف اسپیس ٹیکنالوجی کی کور کمیٹی کے رکن ڈاکٹر خرم خورشید نے بتایا کہ آئی کیوب قمر کا ڈیزائن اور ڈیویلپمنٹ چین اور سپارکو کے اشتراک سے تیار کیا گیا۔

پاکستان کے مصنوعی سیارے کا وزن 7 کلو ہوگا اور چاند کے مدارکے چکر کاٹے گا ۔ اس مشن سے لی جانے والی تصاویر تحقیقی مقاصد میں کام آئیں گی۔

بعد ازاں پاکستان کے پہلے سیٹلائٹ مشن ’آئی کیوب قمر‘نے کامیابی کیساتھ چاند کے مدار سے پہلی تصویر بھیجی تھی۔

واٹس ایپ پر نمبر محفوظ کیے بنا پیغام کس طرح بھیجیں؟

پیغامات بھیجنے والی ایپ میں واٹس ایپ کو سب سے مقبول میڈیم کہا جائے تو بیجا نہ ہوگا، صارفین اب نمبر محفوظ کیے بنا بھی کسی کو پیغام بھیج سکتے ہیں۔

میٹا کی زیرملکیت پیغامات بھیجنے والی ایپلیکیشن واٹس ایپ پر جو نمبر آپ کے موبائل یا ای میل میں محفوظ نہ ہو اس پر فوری پیغام بھیجنا کافی مشکل ہوتا ہے اور بعض لوگ تو کوششوں کے بعد بھی غیرمحفوظ نمبر پر کوئی میسج نہیں بھیج پاتے۔

واٹس ایپ پر اگر نمبر محفوظ ہو تو کسی شخص کو میسج بھیجنا آسان ہوتا ہے۔ تاہم دنیا بھر میں لوگوں کے رابطے کے اس اہم ذریعے کے تحت بنا نمبر محفوظ کیے بھی پیغام بھیجا جاسکتا ہے۔

مندرجہ ذیل تین طریقہ کار کو اپناتے ہوئے آپ مطلوبہ واٹس ایپ نمبر کو محفوظ کیے بغیر ہی اس پر پیغام ارسال کرسکتے ہیں۔

مطلوبہ نمبر خود کو ارسال کریں
اگر نمبر محفوظ نہ ہو اور آپ اس پر پیغام بھیجنا چاہتے ہیں تو مطلوبہ نمبر کو کاپی کریں اور اسے ’چیٹ وتھ یورسیلف‘ میں جاکر اپنے آپ کو بھیج دیں۔ جب نمبر کا رنگ نیلا ہوجائے تو اس پر کلک کریں اور ’چیٹ وتھ‘ کا آپشن منتخب کریں۔ اب ایک نئی چیٹ کھل جائے گی اور آپ اس نمبر پر آسانی کے ساتھ میسج بھیج پائیں گے۔

گروپ چیٹ کے ذریعے پیغام بھیجیں
کسی غیرمحفوظ نمبر پر گروپ چیٹ کے ذریعے بھی پیغام بھیجنا ممکن ہے۔ فون نمبر محفوظ کیے بغیر واٹس ایپ پر پیغامات بھیجنے کا یہ دوسرا طریقہ کار ہے۔ پہلے آپ واٹس ایپ کا وہ گروپ کھولیں جہاں وہ شخص بھی ممبر ہو جس کو آپ میسج کرنا چاہتے ہیں۔

مذکورہ شخص کے نمبر پر کلک کریں اور ’میسج‘ کا آپشن منتخب کریں، جس کے بعد ایک چیٹ ونڈو خود بخود کھل جائے گی جہاں سے آپ باآسانی اس شخص کو اپنا پیغام بھیج سکتے ہیں۔

واٹس ایپ لنک
ایک اور طریقہ کار واٹس ایپ لنک بنانا ہے جوکہ wa.me لنک کے نام سے جانا جاتا ہے، آپ ویب براؤزر میں https://wa.me/yourPhoneNumber ٹائپ کرکے لنک بنا سکتے ہیں۔

اب آپ نے کرنا یہ ہے کہ اس میں ’یور فون نمبر‘ کی جگہ وہ نمبر لکھ دیں جس پر آپ پیغام بھیجنا چاہتے ہیں جبکہ نمبر کے ہمراہ ملک کا کوڈ بھی شامل کریں۔ یہ کرنے کے بعد لنک پر کلک کریں اور ’کانٹینیو ٹو چیٹ‘ آپشن کا انتخاب کریں، اس عمل کے ذریعے بھی آپ نمبر محفوظ کیے بنا میسج بھیج سکتے ہیں۔

بانی PTI کی ہدایت پر شیر افضل مروت کی بنیادی پارٹی رکنیت معطل

بانی PTI کی ہدایت پر شیر افضل مروت کی بنیادی پارٹی رکنیت معطل