وزیرداخلہ محسن نقوی نے لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی لیسکو سے عوام کو  بارہ ارب 44 کروڑ روپے واپس دلوا دیئے۔  لیسکو نے اوور بلنگ کر کے اپنے کنزیومرز سے یہ بھاری رقم  بلاجواز اینٹھ لی تھی اور اپنے معمول کے  مطابق  اسے واپس کرنے میں کنزیومرز سے ٹال مٹول کر رہی تھی۔ 

وزیر اخلہ محسن نقوی نے بھاری اوور بلنگ کا شکار ہونے الے لاکھوں کنزیمرز کو ریلیف دینے کے لئے جب سے ایف آئی اے کو اوور بلنگ کے کیسز میں گرفتاری تک جانے کی ہدایت کی ہیں تب سے صورتحال مسلسل بدل رہی ہے۔ لیسکو میں چند اعلیٰ افسروں کی گرفتاریوں کے بعد  اور محسن نقوی کے مسلسل فالو اپ کے نتیجہ میْں لاہوریوں کے بلوں میں اووربلنگ کے زریعہ اینٹھی گئی رقوم کی  واپسی جاری ہے۔ 

 ایف آئی اے کے متعلقہ اہلکاروں نے بتایا ہے کہ  مئی کے مہینے میں کی گئی بلنگ میں بھی شہریوں کو لیسکو نے ریلیف دیا  ہے۔ 
25مئی تک لہوریوں کو  2 کروڑ 63 لاکھ یونٹ مزید واپس مل گئے۔
لیسکو  اب تک 12 ارب 44 کروڑروپے کی مالیت کے یونٹ عوام کو واپس کر چکا ہے۔

ایف آئی اے کی تحقیقات کے مطابق لیسکو  نے صرف ایک سال کے دوران  34 ارب سےزائدمالیت کی اووربلنگ کی۔ اووربل کیے گئے باقی یونٹس بھی عوام کو واپس کیے جائیں گے۔

Card image cap
کل میٹرک کے امتحانات ہوں گے؟

 وزیراعظم کی جانب سے یوم تکبیر پر عام تعطیل کے اعلان کے بعد میٹرک کا کل ہونے والا پرچہ ملتوی کردیا گیا ہے۔

وزیر جامعات و بورڈ سندھ محمد علی مالکانی نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ کل عام تعطیل کے باعث پرچہ نہیں ہوگا۔

28 مئی تعطیل کے اعلان پر ترجمان کیمبرج بورڈ نے کہا ہے کہ کل او، اے لیولز کے امتحانات شیڈول کے مطابق ہونگے۔

اس سے قبل چیئرمین آل سندھ پرائیویٹ اسکولز حیدرعلی کا کہنا تھا کہ سندھ میں بورڈز امتحانات کو شیڈول کے مطابق رکھا جائے، تعطیل کے باوجود امتحانات رکھے جاسکتے ہیں۔

چیئرمین آل سندھ پرائیویٹ اسکولز نے کہا کہ ری شیڈولڈ امتحان ملتوی کرنے سے متاثر ہوں گے، وزیر یونیورسٹیز اینڈ بورڈز سندھ امتحانات شیڈول کے مطابق کرانے کا اعلان کریں۔

انھوں نے کہا کہ طلبہ اور والدین تذبذب اور غیریقینی کا شکار ہیں، امتحانات کی سنجیدگی اور اہمیت التوا کی متحمل نہیں ہوسکتی۔

واضح رہے کہ وزیراعظم شہباز شریف نے 28 مئی یوم تکبیر کو سرکاری چھٹی قرار دے دیا ہے، ان کا کہنا ہے کہ یوم تکبیر قوم کے ملکی دفاع کو ناقابل تسخیر بنانے کے لیے اتحاد کی یاد دلاتا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ 28 مئی کو فیصلہ ہوا بیرونی دباؤ قبول کرکے سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا، یوم تکبیر سبز ہلالی پرچم تلے متحد ہونے کی یاد دلاتا ہے۔

Card image cap
’عالمی عدالت کا فیصلہ مظلوم فلسطینیوں کی فتح ہے‘

وزیراعظم شہبازشریف نے فلسطین میں نسل کشی کیخلاف دائر مقدمے پر عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے زور دیا ہے کہ سلامتی کونسل، عالمی برادری غزہ میں اسرائیلی آپریشن روکنے کے فیصلے پر فوری عمل کرائے۔

وزیراعظم نے ردعمل میں کہا کہ رفح آپریشن روکنے سے متعلق فیصلے پر عملدرآمد سے دنیا میں امن کی راہ ہموار ہو گی، مظلوم انسانیت کےحق میں فیصلہ دینے والے 13 ججوں کو خراج تحسین  پیش کرتے ہیں۔

بیان میں کہا گیا کہ انسانیت کے حق میں پٹیشن دائر کرنے پر جنوبی افریقا کوخراج تحسین پیش کرتے ہیں پاکستان نے پہلے بھی جنوبی افریقا کی پٹیشن کی حمایت کی تھی اور آئندہ بھی تمام فلسطینیوں کا کیس لڑتے رہیں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ فیصلےکے مطابق اقوام متحدہ کےتحقیقاتی کمیشن کو غزہ اور رفح میں فوری رسائی دی جائے فیصلہ مظلوم انسانوں کی فتح ہے اس پر عملدرآمد کرایا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ راستے کھولنے، غذائی اور طبی امداد کی فوری فراہمی کے فیصلے پر عملدرآمد کرایا جائے عدالتی فیصلے پر عملدرآمد کرایا جائے تاکہ مظلوم انسانوں کو ریلیف مل سکے پاکستان مظلوم فلسطینیوں کے بنیادی، قانونی حقوق کےتحفظ کیلئےکردار ادا کرتا رہےگا۔

Card image cap
وزیر داخلہ محسن نقوی کا نیشنل رجسٹریشن پالیسی بنانے کا فیصلہ

وفاقی وزیر داخلہ محسن نقوی نے نیشنل رجسٹریشن پالیسی  بنانے کا فیصلہ کرلیا ۔ 

 وفاقی وزیر داخلہ محسن نقوی کی زیر صدارت نادرا کے حوالے سے جائزہ اجلاس ہوا، اجلاس میں نیشنل رجسٹریشن پالیسی  بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔ محسن نقوی کا کہنا تھا کہ شناختی کارڈ اور شہریت کا مستند ہونا انتہائی اہمیت کا حامل ہے، اس پالیسی پر تمام صوبوں کا اتفاق رائے بھی حاصل کرنا ہو گا۔ یونین کونسل کو اس ضمن میں بنیاد کا درجہ حاصل ہے، نادرا کی یونین کونسلز تک رسائی اس سلسلے میں انتہائی ضروری ہے۔ پالیسی سے شہریت کے انداراج کو شفاف اور فول پروف بنایا جائے گا، نئی پالیسی سے شہریت کے غیر قانونی اندراج کو بھی روکا جا سکے گا، جسکی وجہ سے غیر ملکیوں کو شناختی کارڈ اور پاسپورٹ جاری ہونے کا معاملہ سامنے آیا۔ 

اجلاس میں چھ بڑے شہروں میں نادرا سنٹرز میں اضافے کے پلان کا  جائزہ لیا گیا، کراچی، لاہور، پشاور، کوئٹہ، اسلام آباد اور راولپنڈی کے علاوہ ملتان کو بھی اس پلان میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ اس پلان کو حتمی شکل دے کر اگلے چند روز میں اس پر عملدرامد کا آغاز کیا جائے، تاکہ عوام کو غیر ضروری رش اور زحمت سے بچایا جاسکے۔

وزیر داخلہ نے ہدایت کی کہ عوام کی سہولت کیلئے خدمت مراکز میں بھی نادرا کاونٹرز کا آغاز کیا جائے۔ اجلاس میں بریفنگ دی گئی کہ وزیر داخلہ کے دوروں اور ان کے بعد کئے گئے اقدامات سے انتظار کا وقت 120 منٹ سے کم ہو کر 75 منٹ رہ گیا ہے، جس پر وزیر داخلہ نے انتظار کے وقت کو مزید کم کرنے کیلئے اقدامات کی ہدایت کی۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ اس وقت نادرا کی رجسٹریشن کل آبادی کا 85 فیصد ہے۔ 

اجلاس میں سیکریٹری داخلہ خرم علی آغا، چئیرمین نادرا لیفٹیننٹ جنرل محمد منیر افسر  اور سینئر افسران نے شرکت کی ۔ 


بجٹ 2024-25 کی تیاریاں ، بڑی پابندی عائد

 بجٹ 2024-25 کی تیاریوں کے باعث ایف بی آر ہیڈکوارٹرز میں داخلہ بند کردیا گیا، صرف چیئرمین ایف بی آر، ممبران اور ڈائریکٹرجنرل سے ملاقات کی اجازت ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق بجٹ مالی سال 2024-25 کی تیاریاں عروج پر ہیں ، بجٹ کی وجہ سے ایف بی آرہیڈکوارٹرزمیں داخلے پر پابندی عائد کردی گئی۔

ایف بی آر نے اس حوالے سے سرکلر جاری کردیا گیا ہے ، جس میں کہا ہے کہ صرف چیئرمین ایف بی آر، ممبران اور ڈائریکٹرجنرل سے ملاقات کی اجازت ہوگی۔

ملاقات کےلیے صرف پہلے سےوقت لینے والوں کوجانےکی اجازت ہوگی اور ملاقات کیلئے طے شدہ وقت بھی بغیر اطلاع دیے تبدیل یا منسوخ کیا جاسکتا ہے/

خیال رہے آئندہ مالی سال 25-2024 کے لیے وفاقی بجٹ اگلے ماہ 7 جون کو پیش کیے جانے کا امکان ہے۔ بجٹ میں وفاق کے اخراجات کا ابتدائی تخمینہ 16 ہزار 700 ارب روپے ہو سکتا ہے اور مالیاتی خسارہ 9300 ارب رہنے کا امکان ہے۔

ذرائع کے مطابق بجٹ میں وفاق کے اخراجات کا ابتدائی تخمینہ 16 ہزار 700 ارب روپے ہو سکتا ہے جس میں سود اور قرضوں پر اخراجات کا تخمینہ 9 ہزار 700 ارب روپے لگایا گیا ہے۔

بجٹ میں ٹیکس آمدن کا ابتدائی تخمینہ 11 ہزار ارب روپے سے زائد ہوسکتا ہے جس میں ڈائریکٹ ٹیکسز کی مد میں 5300 ارب روپے جمع ہونے کا امکان ہے جب کہ 680 ارب روپے فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں جمع ہونے کا امکان ظاہر کیا گیا ہے۔

قوم کی بیٹیاں مردوں کے شانہ بشانہ فرائض انجام دیں گی تو ہمیں فخر ہوگا:مریم نواز

  وزیر اعلٰی پنجاب مریم نواز نے کہا ہے کہ میں پاس آؤٹ ہونے والے جوانوں کو مبارکباد پیش کرتی ہوں۔

  مریم نواز نے لاہور ایلیٹ فورس پنجاب کی پاسنگ آؤٹ پریڈ میں مہمان خصوصی کے طور پر شرکت جہاں انہوں نے خود بھی پولیس کی وردی زیب تن کی ہوئی تھی، اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ 860 ایلیٹ فورس کے جوان پاس آؤٹ ہو رہے ہیں، تقریب میں شرکت کرکے بہت خوشی ہورہی ہے، جب میں آپ کو حلف لیتے ہوئے سن رہی تھی تو میرے رونگٹے کھڑے ہورہے تھے، چاہے میں ہوں یا آپ ہوں، میں سمجھتی ہوں کہ یہ بہت بڑی ذمہ داری ہے جو چند افراد کے حصے میں آتی ہے۔

 انہوں نے بتایا کہ مجھے آج جان کے خوشی ہوئی کہ پاس آؤٹ ہونے والے 860 جوانوں میں 70 خواتین ہیں، میں ان کے والدین کو مبارکباد دینا چاہتی ہوں اور جب قوم کی بیٹیاں لڑکوں کے شانہ بشانہ اپنے فرائض انجام دیں گی تو ہم کو فخر ہوگا، جب بھی میں کسی شہید کو دیکھتی ہوں تو دل میں سوچتی ہوں کہ شہادت کا جذبہ بھی کیا جذبہ ہے کہ والدین اپنے بچوں کو مٹی پر قربان ہونے کے لیے اتار دیتے ہیں، میں اس جذبے کو سلام کرتی ہوں۔ انہوں نے بتایا کہ مجھے آج جان کے خوشی ہوئی کہ پاس آؤٹ ہونے والے 860 جوانوں میں 70 خواتین ہیں، میں ان کے والدین کو مبارکباد دینا چاہتی ہوں اور جب قوم کی بیٹیاں لڑکوں کے شانہ بشانہ اپنے فرائض انجام دیں گی تو ہم کو فخر ہوگا، جب بھی میں کسی شہید کو دیکھتی ہوں تو دل میں سوچتی ہوں کہ شہادت کا جذبہ بھی کیا جذبہ ہے کہ والدین اپنے بچوں کو مٹی پر قربان ہونے کے لیے اتار دیتے ہیں، میں اس جذبے کو سلام کرتی ہوں۔

لیسکو کےخلاف شاہدرہ سٹیشن کےعلاقہ مکینوں کا احتجاج

لیسکو کےخلاف شاہدرہ سٹیشن کےعلاقہ مکینوں کا احتجاج