181

کورونا وائرس کے دور میں دس ہزار مہمانوں کی موجودگی میں انوکھی شادی

عالمی وبا کورونا وائرس نے جہاں سب تقریبات کو ماند کردیا ہے وہیں  ملائیشیا کے بااثر سیاستدان اور سابق وزیر کابینہ ٹینگکو عدنان کے بیٹے ٹینگوکو محمد حافظ کی شادی میں 10 ہزار لوگوں نے شرکت کی۔

ملائشیا کے بااثر سیاست دان کے بیٹے ٹینگوکو محمد حافظ اور ان کی دلہن اویسین الاگیہ کی شادی میں شریک ہونے کے لیے دس ہزار مہمانوں کی ’ڈرائیو تھرو‘ شرکت کا اہتمام کیا۔

اس ڈرائیو تھرو شادی کا اہتمام پتراجایہ میں کیا گیا تھا۔

اتوار کی صبح نئے شادی شدہ جوڑے کو سرکاری عمارت کے سامنے بٹھایا گیا، جہاں سے انہوں نے تقریب میں شرکت کرنے والے مہمانوں کا استقبال کیا۔

شادی میں شریک مہمانوں کی گاڑیوں کی کھڑکیوں کو کھلا رکھا گیا اور مہمانوں کو شادی کی تقریب کی جھلک ملتی رہی جبکہ سماجی دوری کی پابندی پر عمل بھی ہوتا رہا۔

ایک جانب جہاں ملائشیا کو کورونا وائرس کے انفیکشن کی نئی لہر کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے وہیں سماجی فاصلے کے اصولوں نے شادی شدہ جوڑے کو اس قابل کیا کہ وہ وبائی مرض کے دوران بھی ایک زبردست تقریب کا اہتمام کر سکیں۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق شادی میں آئے شرکا کو گاڑیوں کے ذریعے واپس جاتے ہوئے تین گھنٹے لگے جبکہ تقریب ختم ہونے کے بعد نزدیک موجود ٹینٹ میں کھانا موجود تھا۔

کھانے کو پارسل ڈبوں کی شکل میں پیک کیا گیا تھا، تقریب سے واپسی پر مہمان وہاں گاڑی روک کر پارسل لیتے ہوئے گھر روانہ ہوتے رہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں