102

پولیس کے تشدد سے نوجوان جاں بحق، آئی جی پنجاب کا نوٹس

لاہور میں پولیس گردی کا ایک اور واقعہ منظر عام پر آگیا، شمالی چھاؤنی انویسٹی گیشن پولیس کےبہیمانہ تشدد سے نوجوان جاں بحق ہوگیا، آئی جی پنجاب نے واقعے کا نوٹس لیکر رپورٹ طلب کر لیں۔مزید خبریں:پی ٹی آئی پنجاب کی تنظیم تحلیل کرنے کا فیصلہ

تفصیلات کے مطابق شمالی چھائونی انویسٹی گیشن پولیس کے تشدد کا نشانہ بننے والا نوجوان عامر  سروسز  ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئےدم توڑ گیا، لواحقین نے سروس ہسپتال کے باہر روڈ بلاک کر کے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔

 لواحقین  کا کہنا تھا کہ مقتول عامر مالی کا کام کرتا تھا، جسے شمالی چھاؤنی پولیس نے چار روز قبل حراست میں لیا اور ٹارچر سیل میں تشدد کرتے رہے اور عامر کی حالت غیر ہونے پر اسے پرائیویٹ گاڑی میں ہسپتال کے باہر چھوڑ کر فرار ہو گئے۔

آئی جی پنجاب نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور سے پولیس تشدد کی رپورٹ طلب کرلی، ہلاک ہونے والے نوجوان کے بھائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا گیا، پولیس نے ایس ایچ او خرم گل کو حراست میں لے لیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں