249

پنجاب کے سرکاری اداروں میں نفاذِ اردو کی راہیں ہموار ہونے لگیں

سرکاری اداروں میں کارروائی اردو میں کرنے کا معاملہ، لاہور سمیتپنجاب بھر میں سرکاری اداروں میں خط وکتابت اورکارروائی اردو میں کرنے کیراہیں ہموار ہونے لگیں، وزیراعلیٰ نے کابینہ کمیٹی برائے اردو سفارشات بنا دی۔مزید خبریں:فریش دودھ کی فروخت پرپابندی لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج

تفصیلات کے مطابق سرکاری اداروں میں کارروائی اردو میں کرنے کیلئے وزیراعلیٰپنجاب عثمان بزدار نے کابینہ کمیٹی برائے سفارشات قائم کردی ہے، کمیٹی سرکاری تقریبات، استقبالیوں اور اجلاسوں کی روداد کواردو زبان میں تحریر کرےگی۔ کمیٹی کی جانب سے دی گئی سفارشات میں کہا گیا ہےکہ گورنر، وزیراعلیٰ، صوبائی وزراءاور افسران تقریبات میں تقاریر اردو میں کریں، چھوٹی بڑی شاہراہواں پر نصب سائن بورڈز انگریزی کے ساتھ اردو میں بھی تحریر کیے جائیں۔

 تمام محکموں کے ناموں کے سائن بورڈز بھی اردو میں تحریر کیے جائیں، افسران اور اہلکاروں کی ٹریننگ کورسز بھی اردوزبان میں کروائے جائیں، سفارشات میں انگریزی سٹینو گرافروں کے سروس رولز میں انگریزی کیساتھ اردو شارٹ ہینڈ اور ٹائپ کو لازمی قرار دینے کی بھی تجویزدی گئی ہے۔ گریڈ 5 تک کےملازمین سے خط وکتابت اردو زبان میں کرنے کی بھی تجویز کی گئی ہے۔ سفارشات میں کہا گیا ہے کہ اردو زبان کی ترویج کیلئے ضلعی مجالس زبان دفتری کوتشکیل دیجائے۔

 کمیٹی کی جانب سے دی جانے والی سفارشات کابینہ کی قانونی امورکے سامنے رکھی جائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں