189

پاکستان سپر لیگ کا چوتھا ایڈیشن تیزی کے ساتھ حقیقت کے رنگوں میں ڈھلنے کیلئے تیار ہے

پاکستان سپر لیگ کا چوتھا ایڈیشن تیزی کے ساتھ حقیقت کے رنگوں میں ڈھلنے کیلئے تیار ہے اور گزشتہ روز تمام ٹیموں کے کپتانوں کی موجودگی میں ٹرافی کی رونمائی کردی گئی،اس موقع پر چیئرمین پی سی بی احسان مانی کا کہنا تھا کہ سیزن فور کی ٹرافی پاکستانی ثقافت کے رنگوں کی ترجمان ہے ،ایونٹ کا ابھی تک سفر شاندار رہا جس کی کامیابی میں سب نے کردار نبھایااور اسے پاکستان کیلئے باعث فخر بنا دیا،سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ منزل کے قریب پہنچ کر ہارنے کی روایت توڑڈالیں گے ،محمد حفیظ نے آخری نمبر کا لیبل اتار پھینکنے کا عزم ظاہر کیا جبکہ محمد سمیع کو توقع ہے کہ وہ کامیابی کا تسلسل رواں سال بھی جاری رکھیں گے ۔کل سے متحدہ عرب امارات میں شروع ہونے والی پاکستان سپر لیگ کے چوتھے ایڈیشن کی ٹرافی کی رونمائی کی تقریب دبئی میں سجائی گئی جہاں چھ فرنچائز کے کپتانوں کے علاوہ چیئرمین پی سی بی احسان مانی،بورڈ کے نئے ایم ڈی وسیم خان،فرنچائز مالکان اور دیگر معزز مہمان بھی موجود تھے ۔واضح رہے کہ پی ایس ایل فور کا باقاعدہ آغاز کل سے ہوگا جب دفاعی چیمپئن ٹیم اسلام آباد یونائیٹڈ کا سامنا اولین معرکے میں لاہور قلندرز سے ہوگا جس کی تمام تر تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں جبکہ اس سے قبل رنگا رنگ افتتاحی تقریب بھی شائقین کرکٹ کی توجہ کا مرکز ہو گی۔دبئی کے انٹرنیشنل سٹیڈیم میں موجود چھ فرنچائز کے کپتانوں نے ایونٹ کے اختتام پر دی جانے والی مختلف ٹرافیوں کی رونمائی بھی کی اور تصاویر بھی بنوائیں جس میں پشاور زلمی کے ڈیرن سیمی،لاہور قلندرز کے محمد حفیظ،اسلام آباد یونائیٹڈ کے محمد سمیع،کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے سرفراز احمد،کراچی کنگز کے عماد وسیم اور ملتان سلطانز کے کپتان شعیب ملک بھی شامل تھے ۔ اس موقع پر ایونٹ میں شامل تمام ٹیموں کے کپتانوں نے چیئرمین پی سی بی احسان مانی اور منیجنگ ڈائریکٹر وسیم خان کے ہمراہ پریس کانفرنس میں صحافیوں کے سوالوں کے جوابات دئیے ۔چیئرمین پی سی بی احسان مانی کا کہنا تھا کہ پی ایس ایل کا اصل مقصد نوجوان کھلاڑیوں کو اپنا ہنر دکھانے کا موقع فراہم کرنا ہے اور اس کوشش کی بدولت پاکستان کو قیمتی صلاحیت بھی حاصل ہو رہی ہے ۔ قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اس مرتبہ فتح کے مشن کو تکمیل تک پہنچانے کی کوشش کریں گے ۔ کراچی کنگز کے قائد عماد وسیم کا کہنا تھا کہ پی ایس ایل کا پاکستان کرکٹ کی ترقی میں اہم کردار ہے اور اب خواہش ہے کہ پورا ایونٹ پاکستان منتقل ہو جائے ۔لاہور قلندرز کے کپتان محمد حفیظ کا کہنا تھا کہ انتظامیہ نے جیت کیلئے بہترین ٹیم کا انتخاب کیا ہے ۔اسلام آباد یونائیٹڈ کے کپتان محمد سمیع نے فتوحات کا تسلسل جاری رکھنے کا عزم ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ان کیلئے قیادت کا منصب بڑا اعزاز ہے اور وہ اس ٹورنامنٹ کو ایک بار پھر جیتنے کیلئے کوشاں ہیں تاکہ فتوحات کی ہیٹ ٹرک مکمل ہو جائے ۔ملتان سلطانز کے کپتان شعیب ملک بھی ٹائٹل پر نگاہیں جمائے ہوئے ہیں جن کا کہنا تھا کہ گزشتہ ایونٹ کے شروع میں ان کی ٹیم نے جو عمدہ کارکردگی پیش کی اسے دہرانے کی کوشش رہے گی جبکہ مقبول ترین قائد پشاور زلمی کے ڈیرن سیمی کا کہنا تھا کہ تمام ٹیمیں کافی مضبوط دکھائی دے رہی ہیں لیکن وہ اس بار بھی ڈٹ کر مقابلے کیلئے تیار ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں