127

واٹس ایپ کا سب سے کارآمد فیچر جلد آنے کو تیار

گزشتہ کچھ عرصے سے فیس بک کی ملکیت پیغام رسانی کی سب سے بڑی موبائل ایپلی کیشن واٹس ایپ رابطے کا سب سے بڑا ذریعہ ثابت ہوئی ہے تو وہیں اسے جعلی خبروں کے پھیلاؤ کا بھی سب سے بڑا ذریعہ سمجھا گیا ہے۔

اب اس شناخت سے جان چھڑانے کے لیے واٹس ایپ انتظامیہ نے نئے فیچر پر کام شروع کردیا ہے جو جلد ہی تمام صارفین کے لیے میسر ہوگا۔

واٹس ایپ کی انتظامیہ اسے گوگل کے ریورس امیج سرچ سے منسلک کرنے جارہی ہے جس کے بعد بذریعہ واٹس ایپ جعلی خبروں کا پھیلاؤ اور دھوکہ دہی کا امکان کم ہوجائے گا۔

ریورس امیج سرچ کے ذریعے موصول ہونے والی تصاویر کو چیک کرنا آسان ہوتا ہے کہ آیا یہ تصویر اصلی ہے یا جعلی، اگر اصلی ہے تو کب اور کہاں کی ہے۔ گوگل کی اس سروس کی وجہ سے جعلی خبروں اور افواہوں کے پھیلنے میں کمی کی جاسکتی ہے۔

اس آپشن سے ان لوگوں کی جعلسازی بھی سامنے آسکے گی جو دوسرے افراد کی تصویر کو اپنی ظاہر کرتے ہیں۔

واٹس ایپ انتظامیہ گوگل کی اس سروس کو براہ راست واٹس ایپ سے منسلک کرنے پر کام کر رہی ہے تاکہ صارف جب چاہے باآسانی اسے استعمال کر سکے۔ اس کے لیے ریورس امیج سرچ کا آپشن واٹس ایپ کے مینیو میں دستیاب ہوگا۔

یہ فیچر بذات خود تو جعلی خبروں کے پھیلاؤ میں کمی نہیں کرے گا، البتہ یہ اس حوالے سے مدد ضرور کرے گا۔ واٹس ایپ انتظامیہ کے مطابق جعلی خبروں سے بچنے کے لیے لوگوں کا باشعور ہونا سب سے زیادہ ضروری ہے۔

جعلی خبروں کی روک تھام کے لیے واٹس ایپ اس سے قبل ’فارورڈ میسج‘ کی نشاندہی کا فیچر بھی متعارف کروا چکا ہے۔

اس فیچر میں فارورڈ کیے جانے والے یعنی آگے بھیجے جانے والے پیغامات پر واضح طور پر ’فارورڈ میسج‘ لکھا ہوتا ہے جس کی وجہ سے لوگ اس پیغام پر یقین کرنے میں تذبذب کا شکار ہوجاتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں