26

والدین ہوجائیں ہوشیار، بچوں کی زندگیاں خطرے میں

پنجاب میں پولیو مہم کے دوران بچوں کا جعلی ڈیٹا کے اندراج ہونے کا انکشاف، لاہور سمیت پنجاب کے بیشتر اضلاع میں بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے ہی نہیں گئے۔

زرائع کے مطابق لاہور سمیت پنجاب بھر میں 600 سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے نہ پلانے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ لاہور میں علامہ اقبال ٹاؤن اور نشتر ٹاؤن کے مختلف علاقوں میں 213 بچوں کو پولیو قطرے نہیں پلائے گئے۔ لاہور میں بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے بغیر ہی ڈور مارکنگ کی گئی۔ شہریوں نے پولیو ہیلپ لائن پر کال کرکے غلط ڈور مارکنگ پر شکایات بھی درج کرائیں۔

لاہور سمیت راولپنڈی، اٹک اور چکوال میں لیڈی ہیلتھ ورکرز کی جانب سے بچوں کاجعلی اندارج بھی کیا گیا۔ اسی طرح فیصل آباد، بہالونگر اور گجرانوالہ سمیت گجرات میں مختلف علاقوں کے بچوں کو بھی نظراندز کیا گیا۔ زرائع کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے پولیو مہم میں غفلت برتنے پر متعلقہ حکام کے خلاف سخت ایکشن لینے کی ہدایات کیں ہیں۔

وزیر اعلی نے ہدایات کی ہیں کہ نظرانداز ہونے والے علاقوں میں بچوں کو فوری طور پولیو کے قطرے پلائے جائیں۔ پنجاب میں 13 سے 17 دسمبر تک پھر سے پولیو مہم کا آغاز کیا جائے گا۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں