146

نیب نے سوشل سکیورٹی میں تبادلوں کا ریکارڈ طلب کرلیا

وزارت لیبر کیخلاف سوشل سکیورٹی میں افسران کے من پسند تبادلوں کا معاملہ،شکایت کی جانچ پڑتال کرتے نیب لاہور کا سوشل سکیورٹی حکام کو خط۔دو سالہ تبادلوں کا ریکارڈ طلب کر لیا۔

نیب لاہور نے وزارت لیبر کیخلاف سوشل سکیورٹی میں افسران کے من پسند تبادلوں پر تحقیقات کا آغاز کر رکھا ہے۔شکایت کی جانچ پڑتال کرتے ہوئے  نیب لاہور نے سوشل سکیورٹی حکام کو خط لکھا جس پرحکام نے پنجاب کے تمام ڈائریکٹرز اور ایم ایس صاحبان سے تبادلوں کا ریکارڈ طلب کرلیاہے۔مراسلہ کے مطابق 2017 سے 19 تک پنجاب بھر میں سوشل سکیورٹی افسران کے تبادلوں کا مکمل ریکارڈ طلب کیاگیا۔افسران کے نام، عہدہ،رابطہ نمبر، رہائشی پتہ اور موجودہ پوسٹنگ، تبادلے کے نوٹیفکیشن کا ریکارڈ بھی طلب کیا گیا ہے ۔لاہور میں تعینات مختلف ڈائریکٹوریٹ میں ڈائریکٹرز کے تبادلوں اور انکے عہدوں کا ریکارڈ بھی طلب کیا گیا ہے۔مختصرکپڑے نہیں پہن سکتی اس لئے فلم میں کام نہیں کرتی: سارہ خان

  یاد رہے اس قبل قومی احتساب بیور و (نیب ) لاہور نے اختیارات کا ناجائز استعمال کیس میں صوبائی وزیر لیبر انصر مجید خان کے خلاف شکایت کی جانچ پڑتال پر ذیلی اداروں سے ریکارڈ طلب کیا تھا ۔اسی سلسلہ میں سوشل سکیورٹی دیپارٹمنٹ سے گزشتہ دو سالوں میں افسران کے تبادلوں کا ریکارڈ طلب کیاگیا ۔ صوبائی وزیر کیجانب سے تبادلوں میں مبینہ مداخلت اور مالی فوائد حاصل کرنے کی جانچ پڑتال کے تحت ریکارڈ طلبی کی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں