30

محبت کی شادی کرنے والوں کے لیے بڑا فیصلہ

محبت کی شادی کرنے والوں کے لیے بڑا فیصلہ. محبت کی شادی کرنے والا جوڑا اب کسی بھی  ضلع  میں اپنا 164کا بیان قلمبند کراسکتا ہے ۔ لاہور ہائیکورٹ ملتان بینچ کی جانب سے اپنے فیصلےمیں مجسٹریٹ کوحکم دیا گیا ہےکہ اگرکوئی بھی لڑکایالڑکی کسی بھی ضلع کاہو وہ اپنا164 کا بیان دینا چاہیے تو وہاں کا مجسٹریٹ ان کو انکار نہیں کرے گا۔

 لاہور ہائیکورٹ ملتان بینچ کی جانب سے اپنے فیصلےمیں مجسٹریٹ کوحکم دیا گیا ہےکہ اگرکوئی بھی لڑکایالڑکی کسی بھی ضلع کاہو وہ اپنا164 کا بیان دینا چاہیے تو وہاں کا مجسٹریٹ ان کو انکار نہیں کرے گا۔  لاہورہائیکورٹ ملتان بینچ کا فیصلہ ضلع کچہری میں پیش کردیا گیا۔ فیصلے کہا گیا کہ  مجسٹریٹ 164کابیان ریکارڈ کرنےسےانکارنہیں کرسکتے۔ہائیکورٹ ملتان بینچ کےفیصلے کے بعد مجسٹریٹ نے 2پسندکی شادی کرنیوالوں کا 164کابیان قلمبندکرلیا۔

واضح رہے  پسند کی شادی کرنیوالی لڑکی کےوالد نےاغوا کامقدمہ  درج کرارکھاتھا۔لڑکی کا لڑکےکےحق میں بیان  دیتے ہوئے کہنا تھا کہ   کسی نےاغوانہیں کیا۔  وکلا کے مطابق  اس سے قبل مجسٹریٹ پسندکی شادی کرنیوالوں کوانکےضلع بھیج دیتے تھے،وسیم راجپوت،عذرانورین ایڈووکیٹ  کا کہنا تھا کہ لاہور ہائیکورٹ ملتان بینچ  کے فیصلے کےبعد مجسٹریٹ اب بیان لینےکےپابند ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں