99

قمبر، جرگے کی قتل کے ملزم کو 2 بیٹیاں ونی کرنے کی سزا

سندھ کے ضلع قمبر شہداد کوٹ میں مبینہ جرگے نے قتل کے الزام میں ملزم کو اپنی 2 بیٹیاں ونی کرنے اور 90 لاکھ روپے جُرمانے کی سزا سنا دی۔

پولیس نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے مقدمہ درج کر کے جرگے میں شامل 3 افراد کو حراست میں لے لیا۔

قمبر شہداد کوٹ کے ایس ایس پی کامران نواز کے مطابق مبینہ جرگہ قمبر شہر میں سابق ڈی ایس پی اللّٰہ ورایو چانڈیو کی سربراہی میں منعقد کیا گیا۔جرگے نے قتل کے الزام میں چانڈیو قبیلے سے ہی تعلق رکھنے والے ایک شخص علی حسن چانڈیو پر 90 لاکھ روپے جُرمانے سمیت اپنی 2 کم سن بیٹیوں کو (ونی کرنے) مقتول کےخاندان میں رشتہ دینے کاحکم دیا۔

غیر قانونی جرگے کی اطلاع ملتے ہی پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے جرگے میں شامل 3 افراد کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کر دی ہے۔

دوسری جانب مبینہ جرگے کے سربراہ اور سابق ڈی ایس پی اللّٰہ ورایو چانڈیو نے جرگہ منعقد کرنے کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں نے کوئی جرگہ نہیں کیا، مخالفین میری کردار کشی کرنے کے لیے بے بنیاد پروپیگنڈہ کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیئے: ملتان میں جرگے کا زیادتی کے بدلے زیادتی کا شرمناک فیصلہ

ویڈیو بیان میں اپنا مؤقف دیتے ہوئے ان کا مزید کہنا تھا جب سے میں نے چانڈیو تمندار کونسل میں شمولیت اختیار کی ہے تب سے میرے خلاف مخالفین پروپیگنڈہ کر رہے ہیں۔

انہوں نے یہ بھی بتایا کہ انہوں نے مخالفین کے خلاف سندھ ہائی کورٹ لاڑکانہ بنچ میں مقدمہ بھی دائر کر رکھا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں