87

فلور ملز ایسوسی ایشن نے گندم اجراء کی نئی پالیسی مسترد کردی

 پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن نے پنجاب بھر میں یکساں گندم اجراء پالیسی بنانے کا مطالبہ کر دیا۔

فلور ملز ایسوسی ایشن نے کہا ہے سازش کے تحت پنجاب میں نئی گندم اجراء پالیسی بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے، حکومت اگر گندم کی اجراء کی قیمت 1600 روپے مقرر کرے تو آٹے کا 20 کلو کا تھیلا ساڑھے 950 روپے میں فروخت ہو گا۔فلور ملز ایسوسی ایشن کا حکومت سے بڑا مطالبہ

فلور ملز ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئرمین عاصم رضا نے دیگر عہدیداروں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سیکرٹری خوراک پنجاب میں گندم اجراء کی نئی پالیسی بنانے جا رہے ہیں جو منظور نہیں، صرف پانچ اضلاع کو گندم جاری کرنے کی امتیازی پالیسی کے خلاف لائحہ عمل تیار کر رہے ہیں، فلور ملز کو سرکاری گندم کی فراہمی 1600 روپے تک مقرر کی جائے تو آٹے کی قیمتوں میں کمی آئے گی۔پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کے رہنماؤں کی پریس کانفرنس

پاکستان فلور ملزایسوسی ایشن پنجاب کے چئیرمین عبدالرؤف مختار کا کہنا تھا کہ کسی بھی صورت ہم نئی گندم پالیسی کے حق میں نہیں ہیں، صرف پانچ اضلاع کو 15000 ٹن گندم دینا اور باقی اکتیس اضلاع میں سرکاری گندم جاری نہ کرنے کے خفیہ محرکات کو سامنے لایا جائے۔

فلور ملز ایسوسی ایشن نے واضح کیا کہ اگر امتیازی سلوک کیا گیا تو ملیں بند کر سکتے ہیں، مشاورت شروع کر دی ہے، ہفتے کو لائحہ عمل دیں گے۔سونے کی قیمتوں نے ایک مرتبہ پھر نئی تاریخ رقم کردی

دوسری جانب محکمہ خوراک نے فلورملوں کو گندم کی سپلائی شروع کر دی، سیکرٹری خوراک وقاص علی محمود نے سٹی 42 سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ پانچ بڑے شہروں میں گندم کی سپلائی شروع کردی گئی ہے، فلور ملز کو گندم دینے کا مقصد آٹے کی قیمت کو کنٹرول کرنا اور صوبے میں مہنگائی کو کم کرنا ہے۔

سیکرٹری خوراک کا کہنا تھا کہ محکمہ خوراک نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی منظوری کے بعد گندم کی سپلائی شروع کی ہے، تمام فلور ملز کوگندم کی سپلائی ان کے کوٹے کے مطابق دی جارہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ صوبے میں آٹے کا کوئی بحران نہیں اور نہ کسی کو مصنوعی مہنگائی کرنے دی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں