302

حج پیکج کی رقم میں اضافے کے فیصلے کو شہریوں نے رد کر دیا

حکومت کی جانب سے حج پیکج کی رقم میں اضافے کے فیصلے کو شہریوں نے رد کر دیا،   شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے حج پیکج کی رقم میں اضافہ اچھا اقدام نہیں ہے۔یہ بھی لازمی پڑھیں:منو بھائی کی ادبی و سماجی خدمات کی یاد میں تقریب

حج اسلام کا بنیادی رکن ہے اور ہر اہل ایمان کی یہ خواہش ہوتی ہے کہ وہ حج کا فریضہ ادا کرے، حکومت کی جانب سے حج پیکج کی رقم میں اضافے کا اعلان کیا گیا ہے جبکہ اس حکومتی فیصلے کو شہریوں نے یکسر رد کر دیا ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ حج پیکج کی رقم میں اضافہ اہل ایمان پر ظلم ہے، پہلے حج پیکج کے لیئے دو لاکھ اور اسی ہزار روپئے ادا کرنے ہوتے تھے مگر اب چار لاکھ چھتیس ہزار روپئے ادا کرنے ہوں گے جو کہ عام آدمی کی پہنچ سے باہر ہے۔

شہریوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ حج پیکج کی رقم میں اضافے کے فیصلے کو فوری طور پر واپس لیا جائے تا کہ غریب شہری بھی فریضہ حج ادا کر کے خدا کی بارگاہ میں سرخرو ہو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں