350

جسٹس کھوسہ نےبطورچیف جسٹس پہلا کیس نمٹادیا

جسٹس آصف سعیدکھوسہ نےبطورچیف جسٹس پہلاکیس نمٹاتے ہوئے منشیات کے کیس کا فیصلہ سنادیا۔

پاکستان کے نئے چیف جسٹس آصف سعیدکھوسہ کی زیر صدارت سپریم کورٹ میںمنشیات کےکیس کی سماعت میں سزا یافتہ نورمحمد کی سزا میں کمی کی درخواست مستردکردی ۔

سپریم کورٹ نے قرار دیا کہ اس کیس میں گواہ سرکاری ملازمین تھے، جن کا مجرم سے کوئی عناد نہیں تھا۔

یاد رہے کہ 12سوگرام چرس رکھنےپرنورمحمد کوساڑھے4 سال قید اورجرمانے کی سزا سنائی گئی تھی ۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ ایوان صدر میں حلف برداری کی تقریب کے بعد سپریم کورٹ پہنچے جہاں انہیں آج کمرہ عدالت نمبر ایک میں تین فوجداری مقدمات کی سماعت کرنا تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں