264

تحریک انصاف کے رہنما عبدالعلیم خان کو جیل ہوگئی

احتساب عدالت نے سابق صوبائی وزیر اور تحریک انصاف کے رہنما عبدالعلیم خان کی نیب تحویل ختم کرکے انہیں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔یہ بھی لازمی پڑھیں:میں نوبل پرائز کا حق دار نہیں ہوں:وزیر اعظم عمران خان

نیب نے عبدالعلیم خان کو جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر احتساب عدالت میں پیش کیا۔ نیب نے ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں مزید توسیع کی استدعا کی، جس پر عبدالعلیم خان کے وکلا نے مخالفت کی اور نشاندہی کی کہ مزید جسمانی ریمانڈ کی ضرورت نہیں۔احتساب عدالت نے عبدالعلیم خان کا جسمانی ریمانڈدینے کی استدعا مسترد کر دی اور انہیں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔

سابق صوبائی وزیر اپنی گرفتاری کے بعد تفتیش کیلئے 28 روزتک نیب کی تحویل میں رہے۔ احتساب عدالت نے نیب کو ہدایت کی کہ جلد از جلد عبدالعلیم خان کیخلاف ریفرنس دائر کرے۔

  عبدالعلیم خان نے نیب کے بارے میں کوئی بھی تبصرہ کرنے سے انکار کر تے ہوئے کہا کہ اللہ صبر کرنیوالوں کیساتھ ہوتا ہے ۔یہ بھی لازمی پڑھیں:تحریک انصاف نے ایک اور اہم فیصلہ کرلیا

احتساب عدالت کے جج سید نجم الحسن نے ہدایت کی کہ جوڈیشل ریمانڈ ختم ہونے پر عبدالعلیم خان کو 18 مارچ کو دوبارہ عدالت میں پیش کیا جائے۔ عبدالعلیم خان کی پیشی کے موقع سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں