91

پی ایس ایل، نامور کھلاڑیوں کی آمد خوش آئند

پاکستان سپر لیگ اپنے اختتام کی جانب بڑھ رہی ہے، اس بار اس اہم ایونٹ کے آٹھ میچوں کی میزبانی پاکستان نے کی ، پاک بھارت کشیدگی کے باعث فضائی سروس کی معطلی کے باعث لاہور کے میچز کراچی منتقل کردئیے گئے جس کے چار مقابلے مکمل ہوچکے ہیں،کراچی میں جس طرح شائقین کر کٹ میں اس میں دل چسپی کا اظہار کیا وہ قابل تعریف اور باعث فخر ہیں، سخت سیکیورٹی انتظامات کئے گئے تھے، اس مرتبہ بڑی تعداد میں غیر ملکی کھلاڑیوں کی آمد سے دنیا بھر میں پاکستان میں سیکیورٹی میں بہتری کے حوالے سے مثبت پیغام گیا ہے، امید ہے کہ اس سےملک میں کھیلوں کے عالمی مقابلوں کی بحالی میں مدد ملے گی٭ پاکستان ہاکی فیڈریشن نے پولینڈ کے خلاف کراچی میں ایک میچ کرانے کا فیصلہ کیا جو امکان ہے کہ پاکستان نیوی کے کارساز ہاکی اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا، تاہم اگر اس میں بعض تعمیراتی کاممکمل نہیں ہوا تو پھر میچ ایدھی ہا کی اسٹیڈیم منتقل کردیا جائے گا،ذرائع کے مطابق عالمی نمبر21 پولینڈ کی ہاکی ٹیم اپریل میں دورہ پاکستان کے دوران پاکستان کے خلاف چار میچوں کی سیریز کھیلے گی جس کے دو میچ لاہور،اور ایک پنڈی میں ہوگا جس میں پاکستان کی ڈیولپمنٹ ٹیم ایکشن میں ہوگی جس کے انتخاب کے لئے پی ایچ ایف نے حال ہی میں ختم ہونے والی قومی جونیئر ہاکی چیمپئن شپ سے 100کھلاڑیوں کو کیمپ میں بلانے کا فیصلہ کیا ہے٭کھیل کے میدان میں بھارتی انتہا پسندی کو عالمی سطح پر دو اور ناکامی کا سامنا کرناپڑا،پاکستانی کھلاڑیوں کو ویزا نہ دینے پر ورلڈ ریسلنگ فیڈریشن نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئےتمام ممالک کو بھارت سے تعلقات اور تمام رابطےختم کرنے کی ہدایت کردی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں