7

ملک میں جوڑوں، پٹھوں کے امراض میں اضافہ

جوڑوں اور پٹھوں کے امراض ( رہیماٹولوجی )کے ماہرین نے کہا ہے کہ پاکستان کی 15 سے 20 فیصد آبادی پٹھوں اور جوڑوں کے امراض کا شکار ہے جن کی اکثریت خواتین پر مشتمل ہے۔

پاکستان سوسائٹی فار ریوماٹولوجی کی 23 ویں سالانہ کانفرنس 14 سے17 مارچ کو ریجنٹ پلازہ میں منعقد ہوگی جس میں صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سمیت دنیا بھر سے ماہرین شرکت کریں گے ۔

ان خیالات کا اظہار پاکستان سوسائٹی فار رہیماٹولوجی کی 13ویں سالانہ کانفرنس کی کنوینر ڈاکٹر سید محفوظ عالم، پاکستان سوسائٹی فار ریوماٹولوجی کے صدر پروفیسر ڈاکٹر شکیل بیگ،ڈاکٹر احمد اقبال مرزا اور ڈاکٹر عظمیٰ ارم نے منگل کو کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

ڈاکٹر سید محفوظ عالم نے کہا کہ غیر صحت مند طرز زندگی اور سہل پسندی کے سبب پاکستان میں جوڑوں اور پٹھوں کے امراض میں اضافہ ہو رہا ہے ،پاکستان کی 15سے 20فیصد آبادی جوڑوں اور پٹھوں کے امراض میں مبتلا ہے جن میں سب سے زیادہ تعداد خواتین کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں