128

شہر میں شیشہ سموکنگ کرانے پر دفعہ 144نافذ، پابندی کے باوجودسموکنگ کا کاروبار زور پکڑ رہاہے

ہر میں شیشہ سموکنگ کرانے پر دفعہ 144نافذ، پابندی کے باوجودسموکنگ کا کاروبار زور پکڑ رہاہے،شیشہ سموکنگ کرانے والوں نے سرکار کو چکمہ دینے کے کئی طریقے نکال لیے ہیں۔یہ بھی لازمی پڑھیں:ہائیکورٹ کا تعلیمی اداروں میں منشیات کی روک تھام کیلئے پالیسی بنانے کا حکم

تفصیلات کے مطابق شیشہ سموکنگ پر شہر لاہور میں سخت پابندی لگائی گئی تھی۔پرانے نظام میں ڈی سی اوز اس پابندی پر عمل درآمد کراتے اور شہر سے شیشہ کیفے کافی حد تک ختم کردیئے تھے۔ لیکن اب دوبارہ سے شیشہ سموکنگ کا کاروبارسراٹھانے لگا ہے۔ شیشہ سموکنگ کے خلاف کارروائی کرنے والی چھاپہ مار ٹیم بھی فعال نہ رہی۔ شہر میں شیشہ فلیورز اور اس میں استعمال ہونے والے کوئلے کی فروخت بھی جاری ہے۔ شیشہ سموکنگ کرانے والوں نے سرکار کو چکمہ دینے کے کئی طریقے نکال لیے ہیں۔ جس میں گھروں کے اندر کمرشل طور پر شیشہ سموکنگ شروع کرادی گئی ہے۔ کوئی ایک گھر منتخب کرکے فون پر بکنگ کی جاتی ہے اور وقت مقرر پر شیشہ سموکنگ کرائی جاتی ہے۔ اس کے عوض کافی منافع کمایا جارہا ہے۔ ضلعی گورنمنٹ کی طرف سے شیشہ سموکنگ کے خلاف کوئی خاطر خواہ اقدامات نہیں کیے جارہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں