103

حج پیکج کی رقم میں اضافے کا فیصلہ شہریوں نے مسترد کر دیا

حکومت کی جانب سے حج پیکج کی رقم میں اضافہ کے فیصلے کو شہریوں نے مسترد کر دیا، شہریوں کا کہنا ہے کہ حج پیکیج میں اضافہ کا اثر عام شہری پر ہوگا۔یہ بھی لازمی پڑھیں:جی سی یونیورسٹی میں پنجابی زبان کے فروغ کیلئے سیمینار، بھارتی ادیب کی شرکت

ہر مسلمان کی یہ خواہش ہوتی ہے کہ وہ حج کا فریضہ ادا کرے تاہم حکومت کی جانب سے حج پیکیج میں اضافے کے بعد عوام پریشانی کا شکار ہیں۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ حج پیکیج میں اضافہ اہل ایمان ان پر ظلم ہے۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ پہلےحج پیکج کے لئے دولاکھ اور اسی ہزار روپے ادا کرنے ہوتے تھے مگر اب حج کی ادائیگی کے لئے چار لاکھ 36 ہزار روپے ادا کرنے ہونگے جو کہ ایک عام آدمی کی پہنچ سے باہر ہے.

جبکہ حج پیکیج میں اضافے سے عام شہری متاثر ہوگا۔ شہریوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ حج پیکج کی رقم میں اضافہ کے فیصلے کو فوری طور پر واپس لیا جائے تاکہ عام شہری بھی فریضہ حج ادا کر سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں