23

پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے اہم فیصلے، ہاکی میں طویل قامت گول کیپرز مل گئے

پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن نے پچھلے ہفتے اپنے اجلاس میں کئی اہم فیصلے کئے جس کے تحت سر پرست کا عہدہ ختم کردیا، اور اب صدر مملکت پی او اے کے سر پرست نہیں رہے، اس فیصلے کے تحت چاروں گورنرز بھی صوبائی اولمپک ایسوسی ایشن کے سر پرست نہیں رہ سکیں گے، اس اجلاس میں قومی گیمز اپریل میں کوئٹہ میں ہی کرانے کا فیصلہ کیا گیا، بلوچستان حکومت نے اس سلسلےمیں پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کو دس روز میں تاریخ دینے کی یقین دہانی کرائی ہے، ،پی او اے کا اجلاس ایسوسی ایشن کے صدر لیفٹینٹ جنرل(ر) عارف حسن کی صدارت میں ہوا جس میں سکریٹری خالدمحمود،سندھ سے احمد علی راجپوت، سید محفوظ الحق، سافٹ بال فیڈریشن کے سکریٹری آ صف عظیم اور دیگر فیڈریشن کے نمائندوں نے بھی شر کت کی، جس میں آڈٹ کی منظوری دی گئی، سکریٹری کھیل بلوچستان نے بتایا کہ قومی گیمز کے لئے تمام وینوز مکمل ہوچکے ہیں، اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پی او اے کی کمیٹی فروری میں کوئٹہ کا دورہ کر کے انتظامات کاجائزہ لے گی، پی او اے نے تمام فیڈریشنز کوقومی گیمز میں شرکت کے لئے اپنے انٹر نیشنل شیڈول سے 16جنوری تک پی او اے کا آگاہ کرنے کی ہدایت کی،اجلاس میں پی او اے کے لوگو کو عالمی تنظیم کی ہدایت پر تبدیل کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا، جبکہ مارکیٹنگ، میڈیا، پی او اےقومی اکیڈمی، میڈیکل کمیشن،فنانس کمیٹی، کلچر کمیشن بنانے کی بھی منظوری دی گئی،اجلاس مین پنتھالون اور تلوار بازی فیڈریشن کو عارضی طور پر رکنیت بھی دی گئی،جبکہ قومی بیچ گیمز ستمبر میں کراچی میں کرانے کا فیصلہ کیاگیا، میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے پی او اے کے صدر عارف حسن نے کہا کہ فٹبال فیڈریشن کا معاملہ فیفا کے پاس ہے اس کے فیصلے کے بعد پی او اے کوئی فیصلہ کرے گی، انہوں نے کہا کہ بیچ گیمز میںانٹر نیشنل کھلاڑیوں کو بھی مدعو کیا جائے گا۔

پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن نے غیر آئینی سر گر میوں میں ملوث ہونے پر پاکستان روئنگ فیڈریشن کے سکریٹری شہباز ابراہیم کو معطل کردیا ہے، پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سابق سکریٹری رانا مجاہد علی خان پر عائد دس سال کی پابندی میں نرمی کرتے ہوئے سات سال مکمل ہونے پر اسے ختم کردیا ہے۔، جبکہ پاکستان جوڈو اور پاکستان سائیکلنگ فیڈریشنز کی دوبارہ الحاق کی درخواست پر اگلے اجلاس میں فیصلہ کیا جائے گا٭ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سکریٹری شہباز احمد کے بعد اب پی ایچ ایف میں مزید تبدیلیوں کی اطلاعات ہیں جس پر اگلے دس سے پندرہ روز میں عمل در آمد یقینی نظر آ رہا ہے، ٹاسک فورس کے اجلاس مین وزیر اعطم عمران خان نے بھی ہاکی سمیت کئی فیڈریشن کی کار کردگی پر سخت بر ہمی کا اظہار کیا ہے٭ سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے کھیل کے سابق رکن سینیٹر انور بیگ نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی کے کندھوں پر زیادہ بوجھ نہ ڈالیں ، احسان مانی سے کھیلوں سے متعلق ٹاسک فورس کی ذمہ داری واپس لے لینی چاہیے توکہ وہ تمام توجہ کرکٹ کے معاملات پر مرکوز کر سکیں ۔ میڈیا نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سینیٹر انور بیگ نے کہاکہ جنوبی افریقہ کیخلاف ٹیسٹ سیریز میں قومی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی سب کے سامنے ہے اور پاکستان سپر لیگ بھی آئندہ ماہ شروع ہو رہی ہے لہذا وزیر اعظم عمران خان کو چاہیے کہ احسان امنی کے کندھوں پر ڈالی گئی کھیلوں سے متعلق ٹاسک فورس کی ذمہ داریاں ان سے لیکر کسی اور کو دی جائے تاکہ احسان مانی پاکستان کرکٹ بورڈ کے معاملات کو زیادہ بہتر انداز سے چلا سکیں ، انہوں نے کہاکہ جنوبی افریقہ کیخلاف ٹیسٹ سیریز میں پاکستانی ٹیم کی کارکردگی پر انہیں مایوسی ہوئی ہے جبکہ اس کارکردگی نے قومی سلیکشن کمیٹی کی جانب سے قومی اسکواڈ کی سلیکشن پر بھی سوالات اٹھا دیئے ہیں ٭خیرپور میں سندھ ڈاج بال چیمپئن شپ گرلز اور بوائز کراچینے جیت لی ،سکھر نے دونوں ایونٹس میں دوسری پوزیشن حاصل کی، بوائز میں میر پور خاص اور گرلز میں بے نظیر آباد( نواب شاہ) نے تیسری پوزیشن اپنے نام کی،مہمان خصوصی ذوالفقار علی ڈھوٹ نے انعامات تقسیم کئے اس موقع پر سیکریٹری سندھ ڈاج بال ایسوسی ایشن عابد نعیم بھی موجود تھے٭ ڈائریکٹر جنرل ادارہ ترقیات کراچی سمیع الدین صدیقی نے کے ایچ اےہاکی اسٹیڈیم کا دورہ کیا۔
دورہ کے دوران ڈی جی کے ڈی اے نے اسٹیڈیم میں جاری تربیتی کیمپ کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر سابققومی کپتانحنیف خان اور کراچی ہاکی ایسوسی ایشن کے سیکریٹری حیدر حسین نے جدید طرز پر مشتمل تربیتی سہولیات کے بارے میں تفصیلی آگاہ کیا۔ ڈی جی کے ڈی اے نے کہا کہ جس طرح ماضی میں کھیلوں کے میدان میں کے ڈی اے کا نام روشن رہا، میری کوشش ہے کہ کھیلوں کے میدانوں سے تجاوزات کا خاتمہ کرکے مستقل بنیادوں پر کھیلوں کی سرگرمیوں کے لئے استعمال کیا جائے، اس ضمن میں کھیلوں کے میدان آباد کرنے کا سلسلہ جاری ہے، مختلف مقامات پر کھیلوں کے میدان آباد کئے جاچکے ہیں تو دوسری طرف کے ڈی اے ہاکی ٹیم کے کھلاڑی ماضی کے نامور قومی کھلاڑیوں کے زیر نگرانی کھیل میں نکھار لانے کے لئے ان کی صلاحیتوں سے بھرپور استفادہ حاصل کررہے ہیں۔


اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں